Yeh Gham Kia Dil Ki Aadat Hai - Jaun Elia

::: Jaun Elia :::

Yeh Gham Kia Dil Ki Aadat Hai - Jaun Elia
Yeh Gham Kya Dil Ki Aadat Hai - Jaun Elia

Yeh Gham Kia Dil Ki Aadat Hai - Jaun Elia

"Yeh Gham Kia Dil Ki Aadat Hai"(یہ غم کیا دل کی عادت ہے) , this Poetry lyrics are narrated by "Usmaan Wahid", and this Poetry lyrics are penned by "Jaun Elia"(جون ایلیا), and this video produced by Khawab Darichy.
 Yeh Gham Kya Dil Ki Aadat Hai? Nahi To Kisi Se Kuch Shikayat Hai? Nahi To *** Hai Woh Ik Khawab-be-tabeer Us Ko Bhula Dainay Ki Niyat Hai? Nahi To *** Kisi Ke Bin, Kisi Ki Yaad Ke Bin Jie Jaane Ki Himmat Hai? Nahi To *** Kisi Soorat Bhi Dil Lagta Nahie? Haan To Kuch Din Se Yeh Haalat Hai? Nahi To *** Tere Is Haal Par Hai Sab Ko Herat Tujhe Bhi Is Pe Herat Hai? Nahi To *** Hum Ahangi Nahi Duniya Se Teri Tujhe Is Par Nedamat Hai? Nahi To *** Huwa Jo Kuch Yahi Maqsoom Tha Kya Yahi Saari Hekiyaat Hai? Nahi To *** Aziat Naak Umedon Se Tujh Ko Amma Panay Ki Hasrat Hai? Nahi To *** Tu Rehta Hai Khayaal-o-khawab Mein Gum To Iss Ki Wajah Fursat Hai? Nahi To *** Wahan Walon Se Hai Itni Mohabbat Yahan Walon Se Nafrat Hai? Nahi To *** Sabab Joo Iss Judai Ka Bana Hai Woh Mujh Se Khubsurat Hai? Nahi To  


یہ غم کیا دل کی عادت ہے؟ نہیں تو

کسی سے کچھ شکایت ہے؟ نہیں تو

***

ہے وہ اک خوابِ بے تعبیر، اس کو

بھلا دینے کی نیت ہے؟ نہیں تو

***

کسی کے بِن، کسی کی یاد کے بِن

جیئے جانے کی ہمت ہے؟ نہیں تو

***

کسی صورت بھی دل لگتا نہیں؟ ہاں

تو کچھ دن سے یہ حالت ہے؟ نہیں تو

***

تیرے اس حال پر ہے سب کو حیرت

تجھے بھی اس پہ حیرت ہے؟ نہیں تو

***

ہم آہنگی نہیں دنیا سے تیری

تجھے اس پر ندامت ہے؟ نہیں تو

***

ہُوا جو کچھ یہ ہی مقسوم تھا کیا

یہ ہی ساری حکایت ہے؟ نہیں تو

***

اذیت ناک امیدوں سے تجھ کو

اماں پانے کی حسرت ہے؟ نہیں تو

***

تُو رہتا ہے خیال و خواب میں گم

تو اِس کی وجہ فرصت ہے؟ نہیں تو

***

وہاں والوں سے ہے اتنی محبت

یہاں والوں سے نفرت ہے؟ نہیں تو

***

سبب جو اِس جدائی کا بنا ہے

وہ مجھ سے خوبصورت ہے؟ نہیں تو


Post a Comment

Please do not enter any spam link in the comment box.

Previous Post Next Post